گوادر میں پہلی بار ہوا سے چلنے والی کشتی رانی کا مقابلہ

گوادر(سلیمان ہاشم نمائندہ نوائے جنگ لاہور/ برطانیہ)گوادر : تھرڈ ایف پی بٹالین پاک نیوی کیمپ کے سی ای او کپٹن عابد نے نیول اکرم بیس میں گوادر کے صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان نیوی گوادر کے عوام کی فلاح و بہبود ، ثقافتی تناظر ،تفریحی کی تقریبات اور کھیلوں کے فروغ میں ہمیشہ پیش پیش رہی ہے۔
ماضی کی مسلسل کوششوں کی طرح اس دفعہ بھی پاکستان نیوی گوادر کی تاریخ میں پہلی بار ہوا سے چلنے والی کشتی رانی کی تربیت اور مقابلے کا اہتمام کر رہی ہے۔ یہ کیمپ گورنمنٹ آف بلوچستان، نیول اینکریج گوادر اور پرل کونٹییٹل ہوٹل کے تعاون سے 17 جون سے 23جون تک منعقد کیا جائے گا۔
اس مقابلے کو منعقد کرانے میں پاکستان نیوی کو میر عبدالغفور کلمتی ویلفیر ٹرسٹ گوادر کی خصوصی معاونت حاصل ہے۔
اس کیمپ کے انعقاد کے لئے پاکستان نیوی کی تجربہ کار ہوا سے چلنے والی کشتی رانی کے کھلاڑ یوں کو کراچی سے مدعو کیا گیا ہے۔ جن کی زیر نگرانی تربیت (اسکول کے 10سے 16سال کے بچے)اور مقابلے منعقد کیئے جائیںگے۔

اس کیمپ کے انعقاد کے لئے پاکستان نیوی نے 15 ہوا سے چلنے والی کشتیوں کا انتظام کیاگیاہے۔ جن کی تفصیلات مندرجہ ذیل ہیں۔
1- 06 عدد لیزر بوٹس (ماہر کھلاڑیوں کے لئے )
2- 06عدد اوپٹیمسٹ بوٹس ( 10 سے 16 سال کے بچوں کے لئے)
3- 03عدد ونڈ سرفر بورڈز (ماہر کھلاڈیوں کے لئے)،
اس کیمپ میں گوادر کے لوکل اسکولز کے بچوں کو مدعو کیا گیاہے۔ جن کو 17تا 22 جون تک سیلینگ (ہوا سے چلنے والی کشتی رانی ) کی تربیت دی جائے گی۔ اور 23جون کو تربیت کے اختتام پر مقابلے کااہتمام کیا جائے گا۔ تمام مقابلے گوادر پورٹ میں پاک نیوی کے زیر اہتمام حفاظتی اقدامات کو مد نظر رکھے ہوئےہونگے۔
اختتامی تقریب میں گوادر کے مشہور سرکاری اور عوامی نمائندگان کو مدعو کیا جائے گا۔ کامیاب طالب علوں کو سند بھی جاری کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں