امام مسجد نے 16 سالہ حافظ ِ قرآن لڑکے کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا

گوجرہ : گوجرہ میں امام مسجد نے 16 سالہ طالب علم کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔تفصیلات کے مطابق گوجرہ میں امام مسجد نے 16 سالہ حافظ قرآن لڑکے سے زیافتی کی۔یہ شرمناک واقعہ نواحی گاؤں 434 ج بی میں پیش آیا جہاں محنت کش فلک شیر کے بیٹے محمد عثمان کو گاؤں کی مسجد میں حفظ کی تعلیم حاصل کرنے کے دوران امام مسجد محمد عاطف بجٹ نے زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر وہاں سے فرار ہو گیا۔

بتایا گیا متاثرہ طالب علم کا طبی معائنہ کیا گیا،۔طبی معائنے میں لڑکے سے زیادتی کی تصدیق ہوئی گئی۔پولیس نے مقدمہ درج کر کے ملزم کی تلاش شروع کر دی ہے لیکن تاحال ملزم آزاد پھر رہا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو گرفتار کر کے قانون کے مطابق کاروائی کی جائے گی۔

ضرور پڑھیں   جہازکا استعمال ، عبدالعلیم خان کا دھماکہ خیز ویڈیو بیان ،نیا پنڈورا باکس کھل گیا

ایسا ہی ایک واقعہ پشاور میں پیش آیا جہاں یکہ توت میں دو افراد نے مدرسے کے طالب علم کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔

۔متاثرہ بچے کے والد کا کہنا ہے کہ بیٹے نے مدرسے سے واپسی پر بتایا کہ جب وہ مدرسے سبق لینے گیا تو مدرسہ میں قاری ظفر کے ساتھ دو افراد بیٹھے جو اسے چھت پر لے گئے اور اسے ہوس کا نشانہ بنایا۔ علاوہ ازیں ایسے جرائم پیشہ واقعات کے حوالے سے صوبہ پنجاب کے اعداد و شمار انتہائی تشویشناک ہیں۔ تازہ رپورٹس میں پنجاب میں روزانہ اوسطاً 35 افراد کے اغواء، 11 افراد کا قتل، 9 خواتین کی عصمت دری اور 3 بچوں سے زیادتی کا انکشاف ہوا ہے۔

ضرور پڑھیں   ارکان پنجاب اسمبلی نے ایک ماہ کی تنخواہ کرونا ایمرجنسی فنڈ میں دینے کا اعلان کر دیا

پولیس ریکارڈ میں بتایا گیا ہے کہ یکم جنوری سے 30 جون تک 6 ہزار 448 افراد اغوا ہوئے جبکہ اس دوران 2 ہزارسے زائد افراد قتل ہوئے اور ایک ہزار 500 سے زائد خواتین کی عصمت دری کی گئی۔ ریکارڈ کے مطابق رواں سال کے دوران 670 بچوں سے زیادتی کے واقعات رپورٹ ہوئے۔ اس حوالے سے ترجمان پولیس نایاب حیدر کا کہنا ہے کہ پولیس جرائم پیشہ افرا کے خلاف سخت کارروائیاں کر رہی ہے جبکہ جرائم کی شرح میں کمی کے لیے آئی جی پنجاب کرائم میٹنگز کر رہے ہیں۔