139 لوگوں کی خاتون کے ساتھ زیادتی، پورا بھارت ہل کر رہ گیا

حیدر آباد : بھارتی ریاست تلنگانہ میں ایک خاتون نے الزام لگایا ہے کہ مختلف اوقات کے دوران 139 افراد نے اس کی آبرو ریزی کی ہے ، کئی بار اس کی اجتماعی آبرو ریزی بھی کی گئی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق خاتون کی 2009 میں شادی ہوئی تھی لیکن ایک سال بعد ہی اس نے 2010 میں طلاق لے لی تھی۔ خاتون نے الزام لگایا ہے کہ شادی کے تیسرے ہی مہینے اس کے شوہر کے چچا زاد بھائی نے اس کی آبرو ریزی کی ، ملزم نے اس کی ویڈیو اور تصاویر بھی بنائیں اور کسی کو بتانے کی صورت میں انہیں سوشل میڈیا پر وائرل کرنے کی دھمکی دی۔

خاتون کے مطابق اس کے بعد یہ سلسلہ شروع ہوگیا اور اس کے شوہر کے قریبی رشتہ داروں کے علاوہ مجموعی طور پر 139 افراد نے اس کی آبرو ریزی کی، کئی بار ایسا بھی ہوا کہ اسے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ، وہ اتنے سال تک ملزمان کے خوف سے خاموش رہی لیکن اب ایک این جی او کی مدد سے مقدمہ درج کرایا ہے۔

پولیس نے مقدمہ درج کرانے کے بعد خاتون کو میڈیکل چیک اپ کیلئے بھیج دیا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں مکمل تحقیقات کی جائیں گی اور ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔