خواجہ سرا نے نشہ آور دوا دے کر نوجوان کا نازک حصہ کٹوادیا

چندی گڑھ : بھارتی ریاست پنجاب میں خواجہ سرا نے نوجوان کو نشہ آور دوائی دے کر اس کا نازک حصہ کٹوا دیا۔

گرداس پور میں خواجہ سرا سونیا نے ایک مندر کیلئے کام کرنے والے نوجوان سے دوستی کی اور اسے اکثر اپنے گھر لے جانے لگا۔ جب دوستی بہت زیادہ گہری ہوئی تو سونیا نے نوجوان کا تعارف اپنے گرو پروین سے بھی کروادیا۔ دونوں خواجہ سراؤں نے ایک روز نوجوان کو نشہ آور دوا دی اور اسے امرتسر لے گئے اور اس کا نازک حصہ کٹوادیا۔

نوجوان کے مطابق خواجہ سرا سونیا اور پروین نے اسے اپنے گھر پر قید کر رکھا تھا، جب بھی وہ گھر جانے کی بات کرتا تو اس کے ساتھ مار پیٹ کی جاتی تھی۔ اسے مردانگی سے محروم کرنے کے بعد سونیا نے اپنے گرو پروین کے گھر چھوڑدیا، 2 دن تک وہاں رہنے کے بعد کسی طرح وہ وہاں سے بھاگنے میں کامیاب ہوگیا۔

ضرور پڑھیں   مسلمان مخالف کتاب لکھنے والے ڈچ سیاست دان نے اسلام قبول کرلیا

نوجوان نے گھر والوں کو خود کے ساتھ ہونے والی کارروائی کے بارے میں بتایا جس پر اس کی ماں نے پولیس سے رجوع کیا۔ ماں کی درخواست پر پولیس نے دونوں خواجہ سراؤں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارنا شروع کردیے ہیں۔