راوی ریور فرنٹ منصوبہ کی تفصیلات منظرعام پر آگئیں

لاہور: راوی ریور فرنٹ منصوبہ کی تفصیلات منظرعام پر آگئیں ہیں۔ تفصیلات کے مطابق اس منصوبے میں 46 کلومیٹر پر محیط جھیل، 3 بیرا جز، 6 واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس، 3 گھنے جنگل، کثیر منزلہ عمارات، 18 لاکھ ہاؤسنگ یونٹس ہوں گے جبکہ مںصوبہ 5 کھرب روپے کی لاگت سے 3 فیزز میں مکمل کیا جائے گا۔ پاکستان تحریک اںصاف کے ٹویٹر اکاؤنٹ سے تفصیلات بتائی گئی ہیں جن میں بتایا گیا ہے کہ مںصوبہ 5 کھرب روپے کی لاگت سے 3 فیزز میں مکمل کیا جائے گا ۔

اس کے علاوہ مزید تفصیلات سامنے آئی ہیں جس میں بتایا گیا ہے کہ منصوبے میں 46 کلومیٹر پر محیط جھیل، 3 بیرا جز، 6 واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس، 3 گھنے جنگل، کثیر منزلہ عمارات، 18 لاکھ ہاؤسنگ یونٹس ہوں گے۔

تاہم اس حوالے سے حکومت کی خوب تعریف کی جا رہی ہے۔ اس منصوبے کے اجراء اور حکومت کی اس منصوبے میں کی جانے والی کوششوں کو سراہا جا رہا ہے۔

ایک صارف نے عمران خان کی اس منصوبے کے حوالے سے تجاویز پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان نے بہت اہم نکات پر بات کی، یہ ایک مشکل پراجیکٹ ہے، لیکن اللہ سے دعا ہے کہ وہ وزیراعظم کی سربراہی میں اس پراجیکٹ کی تکمیل میں مدد فرمائے۔

حکومت کی جانب سے نئے شہر کا قیام ایک اچھا فیصلہ ہے جس سے پریشر تقسیم ہو گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ملاقات بھی ہوئی تھی۔

ملاقات میں سیاسی،انتظامی امور اور ترقیاتی منصوبوں سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ عثمان بزدار نے وزیراعظم عمران خان کو اتحادی جماعتوں کے تحفظات اور مسائل سے بھی آگاہ کیا۔وزیراعظم عمران خان آج ایوان وزیراعلیٰ پہنچے تو وزیراعلیٰ پنجاب نے ان کا استقبال کیا ۔ اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب کے درمیان ون آن ون ملاقات بھی ہوئی۔

جس میں سیاسی انتظامی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔وزیراعلیٰ نے عمران خان کو تعمیراتی شعبے کی بہتری ، ہاؤسنگ پراجیکٹ اور کورونا صورتحال سے متعلق اٹھائے جانے والے اقدامات پر بریفنگ دی۔وزیراعظم نے کہا کہ پنجاب میں ترقیاتی منصوبوں کو مزید تیز کیا جائے، ان میں کسی قسم کی کوتاہی یا سُستی نہیں ہونی چاہیے۔ اسی طرح وزیراعظم فیصل آباد سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی نے بھی ملاقات کی۔