بروقت کاروائی نہ ہوتی تو آج اے پی ایس جیسا ایک اور سانحہ ہوتا

کراچی : آج پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گردوں نے حملہ کردیا جسے ناکام بنا دیا گیا۔ 10 بجے کے قریب 4 دشہت گردوں نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملہ کر دیاتھا،دو دہشت گرد ابتدا میں ہی مارے گئے جب کہ دو دہشت گرد عمارت کے اندر جانے میں کامیاب ہو گئے۔یہ دہشت گرد پارکنگ کے ذریعے اندر جانے میں کامیاب ہو گئے۔

بعد ازاں وہ بھی مارے گئے۔مگر سلام ہے ان سکیورٹی اہلکاروں،رینجرز اور پولیس اہلکاروں کو جنہوں نے دہشت گردوں کا یہ حملہ ناکام بنا دیا۔جس وجہ سے اسٹاک ایکسچینج میں کاروبار ایک منٹ کے لیے بھی نہیں رکا،دہشت گرد جدید اسلحے سے لیس تھے جس سے واضح ہوتا ہے کہ وہ بڑی کاروائی کرنے کی نیت سے آئے تھے۔عمارت کے اندر دو ہزار کے قریب لوگ موجود تھے جو بلکل نہتے تھے،کہا جا رہا ہے کہ بروقت کاروائی نہ ہوتی تو آج اے پی ایس جیسا ایک اور سانحہ ہوتا،پشاور میں آرمی پبلک سکول پر دہشت گردوں نے اسی طرح سے حملہ کیا تھا۔

وہ اپنے ساتھ جدید اسلحہ لے گئے تھے اور نہتے بچوں کو گولیوں سے بھون ڈالا تھا۔تاہ م آج سکیورٹی اہلکاروں،رینجرز اور پولیس اہلکاروں نے سیکڑوں جاںوں اور کراچی کو بڑی تباہی سے بچا لیا۔بتایا گیا ہے کہ سیکورٹی اہلکاروں نے بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ملک کو بڑے نقصان سے بچا لیا 5 سیکیورٹی اہلکاروں نے جان کا نظرانہ پیش کر کے پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر ملک دشمن عناصر کا حملہ ناکام دیا۔

شہید ہونے اہلکاروں میں 4 سیکیورٹی گارڈ جب کہ ایک سب انسپیکٹر شامل ہیں۔ دہشت گرد جدید اسلحے سے لیس تھے۔دہشت گرد بھاری اسلحے کے ساتھ عمارت میں داخل ہوئے تھے۔وزیراعظم کی کراچی اسٹاک ایکسچینج پردہشت گردوں‌ کے حملے کی مذ مت کی ہے۔ جس وقت فائرنگ کا واقعہ پیش آیا بڑی تعداد میں لوگوں کی آمد و رفت جاری تھی۔ پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے حملے کوفوری طور پر ناکام بنا یا جس سے ملک ایک بڑی تباہی سے بچ گیا۔