کام نہیں ہو رہے،ترقیاتی فنڈز روک لئے گئے،تحریک انصاف اور اتحادیوں کے اراکین پارلیمنٹ نے وزیر اعظم کے سامنے شکایتوں کے انبار لگا دئیے

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف میں کسی قسم کی کوئی تقسیم یا اختلاف نہیں ، اپنے نقطہ نظر کیلئے اظہار خیال کی آزادی ہر ایک کو حاصل ہے ،کورونا کی وباء کی وجہ سے اراکین پارلیمنٹ کے ترقیاتی فنڈز روکے جیسے ہی معاشی صورتحال بہتر ہوگی ترقیاتی فنڈز جاری کردیئے جائینگے ۔

وزیراعظم نے ان خیالات کااظہار جمعہ کو پارلیمنٹ ہائوس میں تحریک انصاف اور اس کی اتحادی جماعتوں کے اراکین پارلیمنٹ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے ان سے ملاقات کی ۔ چیف وہیپ ملک عامر ڈوگر بھی اس موقع پر موجود تھے ذرائع کے مطابق تحریک انصاف کے اراکین نے اپنے حلقوں کے مسائل حل نہ ہونے اور ترقیاتی فنڈز روکے جانے پر وزیراعظم کے سامنے شکایات کے انبار لگادیئے اور کہا کہ ان کے حلقوں میں کام نہیں ہورہے
جس کی وجہ سے ان حلقوں کی عوام حکومت پر کڑی تنقید کررہی ہے اس لئے جلد از جلد ترقیاتی فنڈز جاری کئے جائیں جس پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کورونا کی وباء کی وجہ سے معیشت پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں معاشی چیلنجز سے نمٹنے کیلئے ایک حکمت عملی کے تحت کام کررہے ہیں معیشت پر بوجھ بڑھنے کی وجہ سے ترقیاتی فنڈز روکے گئے مگر صورتحال میں بہتری آتے ہی اراکین کو فنڈز جاری کردیئے جائینگے

۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے کورونا وباء کی وجہ سے متاثرغریب طبقے کی طرف خصوصی توجہ دی اور احساس پروگرام کے تحت ایک کروڑ بیس لاکھ خاندانوں میں سو ارب سے زیادہ تقسیم ہوچکے ہیں لوگوں کو چاہیے کہ وہ احتیاطی تدابیر اپنائیں تاکہ اس وباء کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔ پارٹی کے اندر تقسیم اور اختلافات کی تردید کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پارٹی متحد ہے اور کسی قسم کی کوئی تقسیم نہیں ہے اگر کوئی اپنی رائے کا اظہار کرتا ہے تو یہاس کا حق ہے مگر جو لوگ اہم عہدوں پر فائز ہیں انہیں چاہیے کہ وہ ایسے بیانات دیتے ہوئے احتیاط کریں جس سے اختلافات کا تاثر جائے انہوں نے اراکین کو ہدایت کی کہ وہ بجٹ منظوری کے دوران ایوان میں موجود رہیں اور اپوزیشن کی بجٹ پر ترامیم اور کٹوتی کی تحریک کو ناکام بنائیں ۔