پنجاب میں گاڑیوں کی نمبر پلیٹ تبدیل کرنے کا فیصلہ

لاہور: صوبہ پنجاب میں گاڑیوں کی نمبر پلیٹ کا ڈیزائن تبدیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے اور آئندہ ماہ سے شہریوں کو نئے ڈیزائن کی نمبرپلیٹ جاری کر دی جائے گی، محکمہ ایکسائز پنجاب کی جانب سے سیف سٹی منصوبے کے باعث گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی نمبر پلیٹس کے ڈیزائن کی تبدیلی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پچھلے کئی سال سے پانچ ملین سے زائد گاڑیوں کو جاری کی گئیں نمبرپلیٹس اب سٹی کے کیمروں کی وجہ سے تبدیل کردی جائیں گی۔

۔تفصیلات کے مطابق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب کی جانب سے صوبے بھر کی تمام گاڑیوں کے لیے نئی نمبرپلیٹس جاری کی جائیں گی۔اس بار نمبرپلیٹ کا ڈیزائن تبدیل کر کے اس کا سائز اور فانٹ بڑا رکھا گیا ہے جس کی تصدیق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے ڈائریکٹر کی جانب سے بھی کی گئی ہے۔

گزشتہ برس 2019 سے اب تک محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن عوام سے 12 سو روپے فی نمبرپلیٹ رجسٹریشن کے وقت وصول کر رہا تھا لیکن انہیں نئی نمبر پلیٹ نہیں دی جا رہی تھی۔

اور کہا گیا تھا کہ ڈیزائن تبدیل کیا جا رہا ہے اور اس مد میں 18 لاکھ افراد دربدر پھر رہے تھے اور انہیں نمبرپلیٹس نہیں دی جا رہی تھی۔تاہم اب محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے اس کا ٹھیکہ ایک کمپنی کو دے دیا ہے اور اگلے مہینے سے نئی نمبرپلیٹس ملنا شروع ہو جائیں گی۔نمبر پلیٹ تبدیل کرنے کا فیصلہ سیف سٹی حکام کی جانب سے درخواست موصول ہونے کے بعد کیا گیا ہے۔

سیف سٹی حکام نے اپنی درخواست میں کہا ہے کہ گاڑیوں ،موٹرسائیکلوں اور بسوں کی نمبر پلیٹس کا سائز بڑا کیا جائے تاکہ ان کو سی سی ٹی وی کیمرے میں ریڈ کرنے میں آسانی ہو۔ بتایا گیا ہے کہ یہ فیصلہ سیف سٹی پراجیکٹ کی ای چالانوں کے نتائج بہتر بنانے کے لئے کیا گیا ہے۔