مصر میں قتل کی لرزہ خیز واردات، شوہر کی اپنی ہی بیوی کا ریپ کروانے کی کوشش

قاہرہ : مصر میں قتل کی لرزہ خیز واردات، شوہر کی جانب سے اپنی ہی بیوی کا ریپ کروانت کی کوشش، حسین نامی شخص دوسری شادی کرنا چاہتا تھا، 20 سالہ ایمن کو نوکر سے ریپ کروا کر بدنام کرنے اور پھر اسی بنیاد پر طلاق دینے کی سازش رچی، نوکر نے مزاحمت ہونے پر لڑکی کو 9 ماہ کے بچے کے سامنے قتل کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق مصر میں ایک 20 سالہ شادی شدہ لڑکی کے لرزہ خیز قتل کی واردات نے مصری عوام کو ہلا کر رکھ دیا۔

حسین نامی شخص نے کچھ عرصہ قبل ہی ایمن عادل نامی نوجوان لڑکی سے شادی کی۔ بتایا گیا ہے کہ شادی کے کچھ ماہ بعد ہی حسین دوسری شادی کرنا چاہتا تھا، تاہم اس کی بیوی ایمن نے اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ مصر کے قوانین کے تحت دوسری شادی کیلئے ایمن کو طلاق دینے کی صورت میں حسین کو اپنی جائیداد میں سے حصہ دینا پڑتا۔

مالی نقصانات سے بچنے کیلئے حسین نے اپنی ہی بیوی کو بدنام کر کے اس بنیاد پر طلاق دینے کیلئے خوفناک منصوبہ بنایا۔

حسین نے اپنے احمد نامی نوکر کو راضی کیا کہ وہ اس کی بیوی ایمن کا ریپ کر ڈالے، اور پھر حسین اپنی بیوی کو بدچلن ثابت کر کے طلاق دے ڈالے گا۔ احمد جب منصوبے کے تحت حسین کے گھر پہنچا اور ایمن کا ریپ کرنے کی کوشش کی تو ایمن چیخ چلا اٹھی، جس پر احمد نے خوفزدہ ہو کر ایمن کو اس کے 9 ماہ کی بچے کے سامنے قتل کر ڈالا۔ پولیس کا بتانا ہے کہ دوران تحقیقات سی سی ٹی وی فوٹیج سے پتا چلا کہ ایک شخص نقاب یا پردہ پہنے ہوئے ہے اور اس نے پورے چہرے اور جسم کو ڈھانپا ہوا ہے، مقتولہ کی رہائش تک پہنچا پھر تھوڑی دیر بعد وہاں سے چلا گیا۔

بعدازاں مزید تحقیقات سے پتا چلا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں نظر آنے والے شخص کا نام احمد ہے جو ایمن کے شوہر کے کپڑوں کی دکان میں ملازم تھا۔ بتایا گیا ہے کہ حسین اور احمد دونوں کو گرفتار کیا جا چکا۔