برطانیہ میں تین ماہ بعد لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد دوکانوں پر لمبی قطاریں لگ گئیں

لندن : برطانیہ میں تین ماہ بعد لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد دوکانوں پر لمبی قطاریں لگ گئیں ، صبح 8 بجے کھلنے والی دوکانوں پر لوگ چار گھنٹے پہلے ہی لائن بنا کر انتظار کرتے نظر آئے۔ برطانیہ بھر میں لاک ڈاؤن کے بعد آن لائن شاپنگ میں بے پناہ اضافہ دیکھنے میں آیا لیکن کپڑے جوتے سمیت دیگر استعمال ہونے والی اشیاء کی بعض دوکانیں جن میں پرائم مارک ، ٹی کے میکس سر فہرست ہیں دیگر برینڈز کے مقابلے میں یہاں اشیاء کی نہایت کم قیمت پر فروخت کی جاتی ہیں

، پر آن لائن شاپنگ کی سروس فراہم نہیں کی جاتی جس کے باعث جب حکومت کی طرف سے ان سٹورز کو کھولنے کی اجازت دی گئی تو لوگ کھنٹوں پہلے ہی شاپنگ کے لئے آنا شروع ہو گئے اور دوکانوں کے باہر لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں ۔

لندن ، برمنگھم ، مانچسٹر ، برسٹل سمیت دیگر بڑے شہروں میں پرائم مارک کے سٹورز پر شاپنگ کے لئے آئے لوگوں کا زیادہ ہجوم دیکھنے میں آیا جبکہ ساتھ ہی بعض جگہوں پر لوگ سماجی فاصلے کے قانون کو بُری طرح نظر انداز کرتے نظر آئے ۔ کرونا وائرس کے بعد برطانیہ بھر میں 23 مارچ سے لاک ڈاؤن نافذ کر دیا گیا تھا جس میں آج سے نرمی کرتے ہوئے سماجی فاصلے یقینی بنانے کی شرط پر تمام دوکانوں کو کھولنے کی اجازت دی گئی ۔