فیٹف بل سینیٹ کے بعد قومی اسمبلی سے بھی منظور کروائیں گے،عمران خان

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ فیٹف بل سینیٹ کے بعد قومی اسمبلی سے بھی منظور کروائیں گے،خواجہ آصف نازیبا گفتگو کرتا ہے، ان کے ساتھ پہلے دن ہی نرمی نہیں برتنی چاہیے تھی،ایف اے ٹی ایف بل ملکی مفاد میں ہے، اپوزیشن نے حمایت نہ کی تو بے نقاب ہوجائے گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان اپوزیشن رہنماؤں کو پروڈکشن آرڈر دینے پر اعتراض کیا ۔ انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف نازیبا گفتگو کرتا ہے،آئندہ پروڈکشن آرڈر دینے پر احتیاط کریں۔آپ ان کو پروڈکشن پر بلاتے ہیں یہ ہمارے خلاف تقاریر کرتے ہیں۔ان کے ساتھ پہلے دن سے ہی نرمی نہیں برتنی چاہیے تھی۔

ضرور پڑھیں   پلوامہ حملے کا ملبہ پاکستان پر ڈالنا درست نہیں، نوجوت سنگھ سدھو

وزیراعظم نے کہا کہ 6اگست کو پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس ہوگا۔

ماضی کی خرابیوں کو درست کررہے ہیں۔ایف اے ٹی ایف سے متعلق قانون سازی ملک کے لیے ضروری ہے۔سینیٹ کے بعد قومی اسمبلی سے بھی بلز کی منظوری لے لیں گے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن سیاست بچانے کیلئے پارلیمنٹ کا فورم استعمال کررہی ہے۔اپوزیشن نے شروع سے ہر قانون سازی میں رکاوٹ ڈالنے کی کوشش کی۔قومی مفاد میں ہونی والی قانون سازی میں اپوزیشن کو حمایت کرنی چاہیے۔
انہوں نے کہا کہ اپوزیشن نے ملکی مفاد کو ذاتی مفاد پر ترجیح نہ دی تو بے نقاب ہو جائیں گے۔اجلاس میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اپوزیشن نے اب بدتمیزی کی تو بھرپور جواب دیں گے، اب برداشت نہیں کریں ، ان کو بہت شرافت دکھا دی لیکن شرافت راس نہیں آئی۔ فیٹف بل سینیٹ کے بعد قومی اسمبلی سے بھی منظور کروائیں گے،