آیا صوفیہ میں کشمیر کی آزادی کے لیے خصوصی نوافل ادا کیے گئے

استنبول : ترک سیاستدان علی شاہین نے آیا صوفیہ میں کشمیر کی آزادی کے لیے خصوصی نوافل ادا کر دئیے۔تفصیلات کے مطابق عدالتی فیصلے کے بعد آج استنبول میں واقع آیا صوفیہ میں کئی دہائیوں بعد پہلی مرتبہ نمازِ جمعہ ادا کی گئی جس کی تیاریاں سرکاری سطح پر کی گئی۔ آیا صوفیہ میں نماز کی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے صدر ایردوان اپنے وزرا کے ہمراہ وہاں پہنچے۔

اردگان نے اس دورے کے دوران آیا صوفیہ کے اندر لی جانے والی تصاویر کو اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاونٹس سے شیئر بھی کیا۔حکام کا کہنا تھا کہ نمازِ جمعہ میں 500 افراد کو شرکت کی اجازت دی جائے گی۔اور اب وہ تاریخی لمح آن پہنچا۔ صدر رجب طیب اردگان نماز جمعہ کی ادائیگی کیلئے مسجد آیا صوفیا پہنچ گئے جہاں کابینہ کے وزراء نے ان کا استقبال کیا۔
اس موقع پر تاریخی مناظر دیکھنے میں آئے۔

ضرور پڑھیں   حکومت کاملک بھرمیں مزید 50 ہزاریوٹیلیٹی اسٹورزکھولنےکااعلان

آج 86 سال بعد اس تاریخی مسجد میں نماز ادا کی گئی ہے۔آیا صوفیا مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے لیے لوگ جمع ہوئے۔