کشمیری بچے کی دل دہلا دینے والی تصویر انسانی حقوق پر یقین رکھنے والوں کو یاد رہے گی. ترجمان دفترخارجہ

اسلام آباد : ترجمان دفترخارجہ عائشہ فاروقی نے کہا ہے کہ کشمیری بچے کی دل دہلا دینے والی تصویر انسانی حقوق پر یقین رکھنے والوں کو یاد رہے گی، بھارتی جھوٹی خبریں اور پراپیگنڈہ حقیقت نہیں بدل سکتے، کشمیری عوام اور پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں نئے بھارتی ڈومیسائل کو مسترد کر دیا ہے.

دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروقی نے ہفتہ وار بریفنگ میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے معصوم لوگوں پربھارتی مظالم جاری ہیں، مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کے سلسلے کو آج 332 دن ہوچکے ہیں اور ان مظالم کی ایک جھلک گزشتہ روز دنیا نے دیکھی ہے‘انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں قابض بھارتی فوجی کی درندگی، سفاکی کا مظاہرہ دنیا نے دیکھا، سوپور میں بچے کی تصویر انسانیت پر یقین رکھنے والوں کو یاد رہے گی.

ضرور پڑھیں   مسئلہ کشمیر حل نہ ہوا تومعاملات کسی بھی حد تک جاسکتے ہیں، وزیراعظم

ترجمان دفترخارجہ نے بتایا کہ ہم مقبوضہ کشمیر میں ڈومیسائل کا اجراءمسترد کرتے ہیں، مقبوضہ کشمیر میں ڈومیسائل غیر متعلقہ افراد کو جاری کیے گئے،یہ بھارتی اقدام اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی ہے، بھارتی اقدام مقبوضہ کشمیرمیں آبادی کاتناسب بدلنے کی مکروہ کوشش ہے انہوں نے بتایا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد میں ملاقات ہوئی ہے جس میں دونوں راہنماﺅں کے درمیان افغان صورتحال پر گفتگو ہوئی ہے.

ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ امید ہے افغانستان میں قیدیوں کی رہائی جلد مکمل کر لی جائے گی ،جبکہ ملاقات میں زلمے خلیل زاد نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملے کی مذمت بھی کی. قبل ازیں وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے اپنے بیان میں کہا کہ کشمیری بچے کے سامنے نانا کی شہادت کا واقعہ ہر فورم پر اٹھانے کا اعلان کیا ہے‘انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت کی انتہا کردی گئی، تین سالہ معصوم فرشتے کے سامنے اس کے نانا کو گولیوں سے بھون ڈالنے کے واقعے نے دل دہلا دیے ہیں اس سے بڑی بربریت کا عملی مظاہرہ نہیں کیا جاسکتا.

ضرور پڑھیں   سپریم کورٹ نے ڈیم فنڈ کا نام تبدیل کرنے کی منظوری دیدی

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ آج یورپی یونین کو تمام صورتحال سے آگاہ کیا اور مقبوضہ کشمیر پر تشویش اور پاکستان کے غم و غصے کا اظہار کیا، یونین کو اس تمام صورتحال کا نوٹس لینا چاہیے، پاکستان نے ہر فورم کشمیر میں ہونے والی ظلم و بربریت کو اٹھایا ہے. شاہ محمودقریشی نے کہاکہ بھارت مقبوضہ کشمیرمیں ماروائے عدالت قتل کررہا ہے اور یہ واقعہ بھی اسی ذمرے میں آتا ہے، بھارت نے ظلم کی انتہا کردی ہے، کشمیر میں انٹرنیٹ بند کیا ہوا ہے بین الاقوامی میڈیا کو وہاں جانے کی اجازت نہیں، بھارت کشمیر میں ہونے والے مظالم کو چھپانے کی کوشش کرتا ہے.

ضرور پڑھیں   لندن میں مقیم پاکستانی نثراد صحافی نوائے جنگ کے مدیرآصف سلیم مٹھا کوپاکستان سے خراج تحسین

وزیرخارجہ نے کہا کہ انسانی حقوق کی تنظیمیں آخر کب تک خاموش رہیں گے، انہیں آواز اٹھانا ہوگی، کشمیریوں کے لئے آواز اٹھانا انسانی تقاضا ہے اور پاکستان اس واقعے کو ہر فورم پر اٹھائے گا.