لندن کی ایک سپر مارکیٹ میں مختصر لباس میں آنے والی ماں بیٹی کو خریداری سے روک دیا گیا

لندن : لندن کی ایک سپر مارکیٹ میں مختصر لباس میں آنے والی ماں بیٹی کو خریداری سے روک دیا گیا۔ قابل اعتراض لباس شدید گرمی کی وجہ سے پہنا ہے، ماں بیٹی کا شدید احتجاج، آئندہ کبھی اس سٹور سے خریداری نہ کرنے دھمکی۔ تفصیلات کے مطابق برطانوی دارالحکومت لندن کے نواح میں ایک سپر مارکیٹ کے عملہ نے مختصر لباس میں خریداری کے لیے آنے والی ماں بیٹی کو واپس بھیج دیا۔

برطانوی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق ایک 46 سالہ خاتون نے اپنی 18 سالہ بیٹی کے ہمراہ اپنے ساتھ سلوک پر احتجاج کیا اور کہا کہ انہوں نے یہ لباس شدید گرمی کی وجہ سے پہنا۔ سپر اسٹور اسڈا کے عملہ کی خاتون اور مرد رکن دونوں نے انہیں کہا کہ ان کے سٹور میں فیملیز خریداری کے لیے آتی ہے اور دونون ماں بیٹی کا لباس غیر مناسب ہے، انہیں کم از کم سٹور میں خریداری کرنے والی دیگر فیملیز کا خیال رکھنا چاہیے۔

شانٹل ہمفریز اور ان کی بیٹی ایزابیل نے کہا کہ سٹور کے عملہ کے رویہ کی وجہ سے انہیں اپنی توہین محسوس ہوئی اور وہ آئندہ کبھی اس سٹور سے خریداری نہیں کریں گی۔ واضح رہے کہ اسی طرح کے ایک اور واقع میں آئرلینڈ کی خاتون سیاسی رہنما کو ایک اور سٹور میں تیراکی کا لباس پہن کر خریداری سے روک دیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں