2016ء میں سنتھیا رچی نے بتایا کہ عمران خان مجھ پر عاشق ہو گئے ہیں

لاہور : امریکی خاتون سنتھیا رچی پاکستان پیپلز پارٹی کی قیادت پر زیادتی کے الزامات لگانے کے بعد ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بنی ہوئی ہیں۔تاہم کچھ لوگوں کی جانب سے سنتھیا رچی کی مشکوک سرگرمیوں پر بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں اور کہا جا رہا ہے کہ اس بات کی تحقیقات کرنا ضروری ہے کہ آخر کس بنیاد پر وہ پاکستان آئیں۔

اسی حوالے سے بیگم نوازش علی کے نام سے مشہور ( علی سلیم ) نے امریکی خاتون سے متعلق کئی دعوے کیے ہیں۔علی سلیم کا کہنا ہے کہ میں حلفا کہہ رہا ہوں کہ میں سنتھیا رچی سے متعلق جو کچھ کہوں گا وہ سچ پر مبنی ہے۔علی سلیم کا کہنا تھا کہ سنتھیا رچی سے میری پہلی ملاقات اسلام آباد میں 2015 میں ہوئی تھی۔عیدالاضحیٰ کے موقع پر میرے بھائی کے گھر بار بی کیو کا اہتمام کیا گیا تھا،جہاں ان سے پہلی ملاقات ہوئی۔

ضرور پڑھیں   ایل این جی معاہدہ؛ سپریم کورٹ میں وزیراعظم کیخلاف درخواست سماعت کیلیے مقرر

پہلی ہی ملاقات میں سنتھیا رچی میرے ساتھ گھل مل گئی اور مجھے اچھی لگیں۔اس کے بعد 2016 میں جب میں واشنگٹن ڈی سی آیا تو سنتھیا رچی نے مجھ سے ملنے کے لیے رابطہ کیا۔جب میں نے خاتون سے پوچھا کہ آپ کس جگہ پر ہیں تو انہوں نے بتایا کہ میں احمدیہ مسجد میں قیام پذیر ہوں۔مجھے اس بات پر حیرانی ہوئی کہ سنتھیا رچی ایک احمدیہ مسجد میں کیوں قیام پذیر ہیں ہیں۔

میں نے وہاں پر جمعہ کی نماز بھی پڑھی۔کچھ دن بعد سنتھیا رچی نے مجھ سے رابطہ کیا اور کہا کہ یہاں پر کوئی کانفرنس منعقد ہونی ہے اور بہت زیادہ لوگ آرہے ہیں۔کیا میں آپ کے پاس دو دن کے لیے ٹھہر سکتی ہو۔دو دن کا کہہ کر سنتھیا رچی دو ہفتے تک میرے ساتھ قیام پذیر رہیں۔ان دو ہفتوں کے دوران ہم نے ایک دوسرے کے ساتھ بہت زیادہ وقت گزارا۔اس دوران سنتھیا رچی نے مجھے آفر کی کہ ان کے ہالی ووڈ میں بہت زیادہ تعلقات ہیں۔

ضرور پڑھیں   پاکستان کے ٹاپ ٹین امراء بھی مصیبت کی گھڑی میں کہیں نظر نہیں آ رہے، افسوسناک بات سامنے آ گئی

اگر وہ انہیں دو ہزار ڈالر کے عوض اپنا سیکرٹری بنا لیں تو وہ مجھے ہالی وڈ کا ٹکٹ دیں گی۔علی سلیم نے مزید بتایا کہ اسی عرصہ کے دوران امریکہ میں انتخابات ہونے تھے اور میری خواہش تھی کہ ایک خاتون یعنی کے ہلری کلنٹن امریکی صدر بنیں تاہم سنتھیا نے بڑے دعوے سے کہا کہ کچھ بھی ہو جائے وہ صدر نہیں بن سکتیں۔امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ ہی ہوں گے۔
اسی دوران سنتھیا نے مجھ پر انکشاف کیا کہ عمران خان ان پر لٹو ہو گئے ہیں۔

سنتھیا رچی نے مجھے بتایا کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے انہیں جنسی تعلقات بنانے کے لیے اپروچ کیا۔مجھے حیرت اس بات پر ہے کہ اگرسنتھیا رچی مجھے یہ بات بتا سکتی تھی تو وہ رحمان ملک اور یوسف رضا گیلانی سے متعلق بھی بتا سکتی تھی۔

ضرور پڑھیں   چیف جسٹس کے بیان پر وزیراعظم وضاحت طلب کرسکتے ہیں، نوازشریف

علی سلیم نے مزید کہا کہ کہ خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ 2011 میں میرے ساتھ زیادتی کی گئی۔تو اس وقت وہ کوئی چھوٹی بچی نہیں تھی۔وہ ایک امریکی خاتون ہے جو دنیا بھر میں گھومتی پھرتی ہیں۔اگر ان کے ساتھ اس قسم کا واقعہ پیش آیا تھا تو وہ اس پر آواز بلند کر سکتی تھی۔وہ اسی لمحے پولیس کے پاس بھی جا سکتی تھی اور اپنا میڈیکل ٹیسٹ بھی کروا سکتی تھیں۔لیکن نو سال بعد اس طرح کے الزامات لگانا سمجھ سے بالاتر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں