نوجوان نے محبوبہ کے سابقہ بوائے فرینڈ کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

یوکراین : نوجوان نے محبوبہ کے سابقہ بوائے فرینڈ کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔تفصیلات کے مطابق یوکرین کے شہر میں 17 سالہ طالب کو اپنی گرل فرینڈ کے سابقہ بوائے فرینڈ نے بے دردی سے تشدد کا نشانہ بنا ڈالا،بتایا گیا ہے کہ نوجوان نے اپنی گرل فرینڈ کو لاک ڈاؤن کے دوران سابقہ محبوب کے ساتھ واک کرتے دیکھا،یہ سب اس سے برداشت نہ ہوا اور طیش میں آ کر سلاوا نامی نوجوان کو بری طرح مارا پیٹا۔

اس نے اپنی گرل فرینڈ کے سامنے سلاوا کو زیادتی کا نشانہ بنایا اور بدترین تشدد بھی کیا۔ملزم نے نوجوان پر تشدد کرنے کے لیے بیلچے کا سہارا لیا جس وجہ سے سلاوا کو اندرونی طور پر بھی شدید چوٹیں آئیں۔نوجوان پر تشدد کرنے میں ملزم کے دوستوں نے بھی ساتھ دیا۔

ضرور پڑھیں   بابا وونگا کی 2020ء کے آخر کی خوفناک پیشگوئی سامنے آگئی

ملزمان نے خارکیو کے علاقہ روگن گاؤں کے قریب ایک گودام میں نوجوان کو کئی گھنٹوں تک مسلسل پیٹا۔

نوجوان کی والدہ کا کہنا ہے کہ ابتدا میں پولیس نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا تھا کیونکہ انہیں ڈرایا دھمکایا گیا،اس کے بعد اس نے مقامی سطح پر آواز اٹھائی۔بعدازاں ملزمان کو پولیس نے گرفتار کر لیا۔ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔جس کے نتیجے میں ملزمان کو جسمانی طور پر تکلیف پہنچانے ، عصمت دری ، تشدد اور اغوا کے الزام میں 12 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

سلاوا کی والدہ نے مزید بتایا کہ میرے بیٹے نے بتایا کہ مجھے کئی گھنٹوں تک پیٹا جاتا رہا ، بیلچے کے ہینڈل سے ریپ کیا جاتا تھا ، اور لوہے کی سلاخوں سے پیٹا جاتا تھا۔انہوں نے اس کے ہاتھ ، ٹانگیں ، سر ٹیپ سے باندھ رکھے تھے۔ملزمان نے اس کے سر پر ٹیلیفون توڑ دیا تاکہ وہ فون نہ کر سکے۔ملزمان نے تشدد کے دوران اس کی ویڈیو بھی بنائی۔ڈاکٹروں نے بتایا کہ سلاوا کو جب اسپتال لایا گیا تو اس کے سر پر چوٹیں ، چہرے پر زخم ، تین ٹوٹی ہوئی پسلیاں اورناک سے خون بہہ رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں