بچوں کے ساتھ زیادتی کا کام والد کو دیکھ کر شروع کیا

لاہور : بچے کے ساتھ زیادتی کے بعد قتل کے کیس میں تہلکہ خیز انکشافات سامنے آ گئے۔دس سالہ بچے کے ساتھ بدفعلی کے بعد قتل کرنے والے ملزم نے ہوشربا انکشافات کیے ہیں۔ ملزم نے پولیس کو بتایا کہ اس نے بچوں کے ساتھ بدفعلی کا کام اپنے باپ کو دیکھ کر شروع کیا۔ملزم نے پولیس کے سامنے اعتراف کیا کہ اس کا باپ عبداللطیف اس کے سامنے بچوں کے ساتھ بدفعلی کرتا تھا۔
محلے کے تین بچوں کے ساتھ والد نے گھناؤنا کام کیا۔جب لوگوں کو اس حوالے سے پتہ چلتا تو وہ ان معافی مانگ لیتا۔والد کو دیکھ کر میرا بھی حوصلہ بڑھا اور یہ گھناؤنا کام شروع کر دیا۔ملزم کا کہنا تھا کہ میں نے دو بچوں کے ساتھ بدفعلی کی۔ملزم کی والدہ کا کہنا ہے کہ تقریبا ڈیڑھ سال پہلے اس کے شوہر نے یہ کام شروع کیا۔

ضرور پڑھیں   کرونا وائرس کے خلاف برسرپیکارڈاکٹروپیرامیڈیکل سٹاف قومی ہیرو ہیں ،کمشنر بہاول پور

ایک دو مرتبہ بچوں نے اپنے والدین سے شکایت کی۔

جس پر اس کا شوہر یا پھر وہ خود معافی مانگ لیتی تھی۔پولیس نے ملزم کا 6روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کرلیا ہے۔تفتیش کے دوران مزید انکشافات سامنے آنے کا امکان بھی ظاہر کیا جارہا ہے۔پولیس نے ملزم عبدالرحمن کے ساتھ اس کے والد کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔سی سی پی او لاہور کا کہنا ہے کہ ملزمان نے مزید تفتیش کی جا رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں