کیا کورونا وائرس جنسی تعلقات کے ذریعے بھی منتقل ہوسکتا ہے؟ حیران کن دعویٰ

بیجنگ : کورونا وائرس پھیلنے کے بعد دنیا بھر میں ماہرین اس پر تحقیقات کر رہے ہیں اور ان تحقیقات میں آئے روز اس کے پھیلاﺅ کے نئے طریقوں کا انکشاف ہو رہا ہے۔ اب چینی ڈاکٹروں نے یہ حیران کن انکشاف کر دیا ہے کہ یہ موذی وائرس جنسی تعلق کے ذریعے بھی پھیل سکتا ہے۔

دی گارڈین کے مطابق چین کے شینگ چیو میونسپل ہسپتال کے ڈاکٹروں نے 38مریضوں کا نطفہ لے کر اس کے ٹیسٹ کیے ہیں اورحیران کن طور پر ان میں سے 6مریضوں کے نطفے میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

اس سے قبل ایک تحقیق میں ماہرین بتا چکے ہیں کہ کورونا وائرس مریض کے پاخانے میں بھی موجود ہوتا ہے اور اب نطفے میں اس کی موجودگی کے انکشاف کے بعد ان چینی ڈاکٹروں نے لوگوں کو متنبہ کیا ہے کہ وہ جنسی تعلق میں بھی حفاظت کے پہلو کو نظرانداز مت کریں کیونکہ اس سے بھی کورونا دوسرے فریق کو منتقل ہو سکتا ہے۔

ضرور پڑھیں   لڑکا لڑکی کے درمیان دنیا کا سب سے خطرناک بوسہ

امریکن میڈیکل ایسوسی ایشن کے جریدے میں شائع ہونے والی اس تحقیقاتی رپورٹ میں چینی ڈاکٹروں نے لکھا ہے کہ یہ تحقیق بہت محدود پیمانے پر کی گئی ہے۔ عالمی ماہرین کو بڑے پیمانے پر اس معاملے پر تحقیق کرنی چاہیے اور حتمی نتائج دنیا کے سامنے لانے چاہئیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں