لڑکیوں کے ساتھ زیادتی کی منصوبہ کرنے والے چیٹ گروپ کے ایڈمن کو گرفتار کر لیا گیا

نئی دہلی : لڑکیوں کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی منصوبہ کرنے والے چیٹ گروپ کے ایڈمن کو گرفتار کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق بھارت میں نوجوان لڑکوں کے ایک چیٹ روم کا انکشاف ہوا ہے جس میں لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی تھی۔’بوائز لاکر رومز‘ دراصل سوشل شیئرنگ ایپلی کیشن انسٹاگرام پر دو درجن کے لڑکوں کی جانب سے بنایا جانے والا چیٹ گروپ کا نام ہے۔

جس کے سکرین شاٹ پہلی بار3 مئی کو بھارتی سوشل میڈیا پر سامنے آنے کے بعد ہنگامہ کھڑا ہوگیا تھا۔بوائز لاکر روم نامی چیٹ گروپ میں 18 سال کی عمر تک کے 20 لڑکے شامل تھے اور وہ مذکورہ چیٹ گروپ میں خواتین طالبات اور کم عمر لڑکیوں کی تصاویر شیئر کرنے سمیت ان کے جسمانی خدوخال پر فکر ے بھی کستے تھے۔

۔گذشتہ روز اس کیس میں ایک گرفتاری عمل میں لائی گئی تھی تاہم اب چیٹ گروپ کے ایڈمن کو گرفتار کر لیا گیا۔
جو کہ دہلی پولیس کے سائبر کرائم سیل کی اس کیس میں دوسری گرفتاری ہے۔تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس گروپ میں کل 22 ممبرز تھے۔جن میں سے 2 نوجوان بالغ تھے جو کالج کے طالب علم تھے جب کہ باقی مختلف سکولز میں زیر تعلیم تھے،گروپ کے شناخت شدہ ممبروں کے موبائل فون قبضے میں لے کر فرانزک تجزیے کیلئے بھیجے گئے ہیں۔

ضرور پڑھیں   بھارتی نیول چیف کی اپنی ناکامی کو چھپانے کے لیے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی

سائبر کرائم یونٹ نے مبینہ گروپ اور اس کے ممبروں کے بارے میں فیس بک کے زیر ملکیت سوشل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارم انسٹاگرام سے معلومات طلب کی ہیں۔

تحقیقات میں مزید بتایا گیا ہے کہ گروپ چیٹ کے سکرین شارٹس لیک ہونے کے بعد اس گروپ کو ڈیلیٹ کر دیا گیا تھا۔ ایک اور گروپ تشکیل دے دیا گی،پولیس کو گمراہ کرنے کے لئے نئے گروپ میں کچھ لڑکیوں کو بھی شامل کیا گیا تھا۔تفتیش کار نے بتایا کہ اصل گروپ اپریل کے شروع میں بنایا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں