’ایک ڈائریکٹر نے ہاتھ ملاتے ہوئے میری ہتھیلی پر خارش کی، سہیلی نے بتایا اس کا مطلب ہے کہ وہ تمہارے ساتھ سونا چاہتا ہے‘

Spread the love

ممبئی : سویڈن سے تعلق رکھنے والی اداکارہ ایلی اورم نے انکشاف کیا ہے کہ بالی ووڈ میں کام کے دوران انہیں بھی دیگر کئی اداکاراﺅں کی طرح کاسٹنگ کاﺅچ کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

ایک انٹرویو کے دوران انہوں نے بالی ووڈ کی چکا چوند نگری کی اصل حقیقت پوری دنیا کے سامنے بیان کردی۔ اداکارہ ایلی اورم نے بتایا کہ ایک بار وہ ایک ڈائریکٹر سے ملنے کے بعد ہاتھ ملاکر باہر جانے لگیں تو ڈائریکٹر نے انگلی سے ان کی ہتھیلی پر خارش کی۔ ’ میں کچھ سمجھ نہیں پائی ، میں نے اپنی ایک سہیلی سے پوچھا کہ کیا ہندوستان میں ہاتھ ملانے کا یہ کوئی نیا طریقہ ہے؟ اس پر میری سہیلی نے کہا کیا اس نے سچ میں ایسا کیا؟ تب اس نے بتایا کہ اس کا مطلب ہوتا ہے کہ وہ تمہارے ساتھ سونا چاہتا ہے۔‘

ضرور پڑھیں   بالی ووڈ میں کام نہ ملنے کی وجہ سے شرابی ہوگیا تھا، بوبی دیول

اداکارہ نے بتایا کہ یہ واقعہ پیش آنے کے بعد انہیں بہت حیرت ہوئی اور وہ ہر انسان کو یاد کرنے لگیں جن کے ساتھ انہوں نے ہاتھ ملایا تھا۔

ایلی اورم کے مطابق بالی ووڈ میں انہیں غیر ملکی ہونے کے باعث امتیازی سلوک کا بھی سامنا کرنا پڑا جس کے باعث انہیں بہت زیادہ پریشانیاں اٹھانا پڑیں۔ اداکارہ نے بتایا کہ انہیں بالی ووڈ میں اپنے قد کاٹھ، دانتوں اور لمبے بالوں کی وجہ سے تنقید کا نشانہ بنایا ، انہیں اپنا وزن کم کرنے کیلئے بھی کہا گیا ، ’ مجھے اپنے بالوں سے بہت زیادہ پیار تھا لیکن مجھے کہا گیا کہ انہیں کٹوادوں کیونکہ ان بالوں کے ساتھ میں آنٹی لگتی ہوں۔‘

ضرور پڑھیں   نئی فلم ’ ’میلیفسنٹ‘‘ میں انجلینا جولی ولن بن گئیں

خیال رہے کہ بالی ووڈ کی رنگین دنیا میںنوجوان لڑکیوں اور اداکاراﺅں کا جنسی استحصال کوئی نئی بات نہیں ہے، اس طرح کے واقعات متعدد اداکاراﺅں کے ساتھ پیش آچکے ہیں او روہ مختلف مواقع پر ان کا اظہار بھی کرچکی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں