41

چیئرمین سینیٹ کیخلاف تحریک واپس لینے کیلئے دباؤ ڈالا جارہا ہے، اپوزیشن

Spread the love

اسلام آباد: حزب اختلاف نے کہا ہے کہ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کیلئے دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

اسلام آباد سینیٹ میں اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ اجلاس ہوا جس میں 54 سینٹرز نے شرکت کی۔ اجلاس میں چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے خلاف تحریک واپس لینے کی حکومتی درخواست زیر بحث آئی تاہم اپوزیشن نے چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک واپس لینے سے انکار کردیا۔

اپوزیشن رہنماؤں نے کہا کہ تحریک عدم اعتماد لانے کا فیصلہ تمام جماعتوں کی مشاورت سے ہوا ہے جسے واپس لینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔
اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے راجہ ظفرالحق نے کہا کہ سینیٹ سیکرٹریٹ نے بتایا ہے کہ ہم نے صادق سنجرانی کیخلاف اپوزیشن کی درخواست پر کام شروع کردیا اور وزارت پارلیمانی امور کو خط لکھ دیا ہے، ہمارے لوگوں پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے، اداروں کی طرف سے بھی کوشش کی جا رہی ہیں۔

ضرور پڑھیں   یہ صرف باتیں کرتے ہیں کوئی بھی ان سے این آر او نہیں مانگ رہا، خورشید شاہ

شیری رحمان نے کہا کہ جو حربے استعمال کئے جا رہے ہیں اس کے باوجود تمام لوگ متحد ہیں، اپوزیشن کے سینیٹرز سیسہ پلائی دیوار بن گئے ہیں۔

مشاہد اللہ خان نے کہا کہ جس طرح توڑ پھوڑ کی باتیں ہو رہی ہیں یہ صرف باتیں ہی ہیں، ہم کسی قسم کا دباؤ یا دھمکی ماننے کو تیار نہیں، ہم نے اکثریت ثابت کر دی ہے، اب صادق سنجرانی کو استعفی دے دینا چاہیے۔ مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ حکومت کو اب ایک لمحے کے لیے بھی باقی نہیں رہنا چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں