59

وہ دوائیاں جن کا استعمال مردوں کو بانجھ بنا سکتا ہے

Spread the love

لندن :خواتین اپنی ظاہری شکل و صورت کے حوالے سے بہت متفکر رہتی ہیں تاہم مردوں کو جس واحد چیز کی فکر ہوتی ہے وہ ان کے بال ہیں۔ کسی مرد کے بال جھڑنے شروع ہو جائیں تو وہ پریشان ہو جاتا ہے اور ادویات کا استعمال شروع کردیتا ہے تاہم اب بالوں کو گرنے سے روکنے اور انہیں دوبارہ اگانے کے لیے استعمال ہونے والی ان ادویات اورسٹیرائیڈز کے متعلق سائنسدانوں نے سنگین وارننگ جاری کر دی ہے۔

میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ یہ گولیاں اور سٹیرائیڈز مردوں کو بانجھ بنا رہی ہیں۔ جو مرد ان ادویات کو استعمال کرکے خواتین کے لیے پرکشش بننا چاہتے ہیں اور پھر شادی کرکے اولاد حاصل کرنا چاہتے ہیں، ممکنہ طور پر ان ادویات کا ان پر الٹا اثر ہوتا ہے، ان سے نہ صرف ان کی جنسی صحت تباہ ہوتی ہے بلکہ ان اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت بھی کم ہوتی چلی جاتی ہے۔

تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ اور یونیورسٹی آف شیفیلڈ کے پروفیسر ایلن پیسی کا کہنا تھا کہ ”بالوں کو گرنے سے روکنے والی ادویات اور سٹیرائیڈز مردوں میں عضو مخصوصہ کی ایستادگی کا مسئلہ بھی سنگین بنا دیتی ہیں۔ مردوں کے بال گرنے میں چونکہ مردانہ جنسی ہارمون ٹیسٹاسٹرون کا بہت عمل دخل ہوتا ہے اور یہ ادویات اس ہارمون کی پیداوار کو نشانہ بناتی ہیں لہٰذا اس کے نتیجے میں مرد کی جنسی صحت اور اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت کا متاثر ہونا یقینی ہوتا ہے۔“

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں