168

باپ بننے میں مشکل کا شکار مردوں کو کیا غذا استعمال کرنی چاہیے؟ جانئے

Spread the love

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) چند ہفتے قبل ایک بین الاقوامی تحقیقاتی سروے میں بتایا گیا تھا کہ دنیا میں مردوں کی افزائش نسل کی صلاحیت میں تیزی سے کمی واقع ہو رہی ہے۔ اب دو برطانوی ماہرین غذائیات نے اس حوالے سے مردوں کو کچھ ایسے مشورے دے دیئے ہیں جن پر عمل کرکے وہ بانجھ پن کے خطرے سے بچ سکتے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق روب ہوبسن اور سارابریور نامی ان ماہرین کا کہنا ہے کہ ”بانجھ پن کا شکار ہونے والے مردوں میں سے 30سے 80فیصد ایسے ہوتے ہیں جو جدید طرز زندگی کے سبب لاحق ہونے والے انتہائی ذہنی دباﺅ اور ڈپریشن کی وجہ سے اس مرض کا شکار ہوتے ہیں۔ چنانچہ مردوں کو اس ڈپریشن سے نجات حاصل کرنی چاہیے اور خود کو پرسکون رکھنے کی کوشش کرنی چاہیے۔ اس کے علاوہ مردوں میں سپرمز کی کمی کی وجہ انتہائی چست اور گرم زیرجامے پہننا ہے۔ مردوں کو نسبتاً ڈھیلے ملبوسات پہننے چاہئیں جو زیادہ گرم بھی نہ ہوں۔“

ماہرین کا کہنا تھا کہ ”مردوں کا لیپ ٹاپ گود میں رکھ کر استعمال کرنا بھی ان کی جنسی صحت کے لیے انتہائی نقصان دہ ثابت ہوتا ہے کیونکہ اس سے ان کے جسم کے مخصوص حصے کا درجہ حرارت صرف 15منٹ میں تین ڈگری سے زیادہ بڑھ جاتا ہے۔ مردوں کو انتہائی گرم ماحول سے میں جانے سے بھی گریز کرنا چاہیے، مثال کے طور پر انہیں سٹیم رومز میں نہیں جانا چاہیے اور سوانا باتھ نہیں لینا چاہیے۔اولاد کے حصول میں مشکلات کے شکار مرد اگر سگریٹ پیتے ہیں تو اس سے نجات حاصل کریں، موٹاپے کو کم کرنے کی کوشش کریں اور خوراک میں پھلوں اور سبزیوں کا زیادہ استعمال کریں۔ ایسی خوراک مردوں کے لیے بہت فائدہ مند ثابت ہو سکتی ہے جس میں زنک، سیلینیم اور وٹامن سی وافر مقدار میں پائے جاتے ہوں۔ایسے مردوں کو ڈیری مصنوعات، گوشت اور چینی کا استعمال کم سے کم کرنا چاہیے۔ “

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں