142

وزیر اعظم نریندرمودی خالی جھیل کو دیکھ کر ہاتھ ہلاتے رہے

Spread the love

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کے دورے پر بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو منہ کی کھانا پڑ گئی ،جھیل کی سیر کے دوران کشتی پر کھڑے ہو کر ایسے ہاتھ ہلاتے رہے جیسے ہزاروں لوگ ان کے استقبال کو موجود ہوں لیکن حقیقت میں نہ تو وہاں کوئی بندہ تھا نہ بندے کی ذات ۔ پہاڑوں کی جانب سے ہاتھ لہراتے ہوئے یہ ویڈیو کلپ منظر عام پر آنے کے بعد نریندر مودی کو سوشل میڈیا پر مذاق کا نشانہ بنا دیا گیا ہے۔

تفصیل کے مطابق نریندر مودی نے گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر کا دورہ کیا تو اس موقع پر وادی بھر میں احتجاج و ہڑتال کی گئی اور کشمیری عوام نے ان کے دورے پر یوم سیاہ منایا۔بھارتی وزیراعظم نے اپنے دورے کے دوران مختلف منصوبوں کا افتتاح کیا اور جب وہ ‘دل جھیل’ کی سیر کو پہنچے اور کشتی میں سوار ہوئے تو انہوں نے یہ دکھانے کے لیے کہ لوگ ان کا استقبال کر رہے ہیں، پہاڑوں کی جانب دیکھ کر ہاتھ لہراتے رہے۔

ضرور پڑھیں   مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کی جارحیت میں 3 فلسطینی نوجوان شہید

بھارتی نیوز ایجنسی اے این آئی نے جب ان کی یہ ویڈیو سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر اپ لوڈ کی تو اس پر کشمیر کے سیاسی رہنماو¿ں سمیت سوشل میڈیا صارفین نے شدید تنقید کا نشانے بنانے کے ساتھ مختلف جملے کسے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں