عورت نے 19 سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا، پڑوسی ملک سے انتہائی شرمناک خبر آگئی

Spread the love

بھارت کو دنیا کا ریپ کیپٹل قرار دیا جاتا ہے جس کا دارالحکومت نئی دلی دنیا بھر میں خواتین کے خلاف جرائم کے حوالے سے بدنام ہے۔ اب اسی دلی سے ایک نیا کیس سامنے آیا ہے جس میں ایک خاتون اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر لمبے عرصے تک 19 سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتی رہی۔

بھارتی ٹی وی نیوز 18 کے مطابق نئی دلی میں نوجوان لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کا انوکھا واقعہ پیش آیا ہے ۔ شیوانی نامی ایک خاتون نے اپنے ساتھیوں روہت اور راہول کے ساتھ مل کر نوجوان لڑکی کو کئی ماہ تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ پولیس نے ملزمان کے ساتھ ساگر نامی شخص کو بھی گرفتار کرلیا ہے جس پر لڑکی کو محبوس بنا کر رکھنے کا الزام ہے۔
متاثرہ لڑکی کا کہنا ہے کہ اس کے ساتھ زیادتی کا پہلا واقعہ مارچ 2018 میں پیش آیا۔ لڑکی نے بتایا کہ اسے دولوگ دلی کی دلشاد کالونی میں ایک فلیٹ پر لے گئے جہاں انہوں نے اس کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی اور اس کی ویڈیو بنا کر اسے بلیک میل کرتے رہے۔ لڑکی نے بتایا کہ ملزمان کے ساتھ موجود نوجوان خاتون اسے جنسی کھلونوں کے ساتھ زیادتی کا نشانہ بناتی تھی۔ ’ مجھ سے زیادتی کرنے والی خاتون کو کسی نے میرا ریپ کرنے پر مجبور نہیں کیا بلکہ وہ ایسا اپنی تسکین کیلئے کرتی تھی، میں چاہتی ہوں کہ دونوں مرد ملزمان کے ساتھ اس خاتون کو بھی سزا دی جائے‘۔

ضرور پڑھیں   جیف بیزوس کو کچھ ہی روز میں 53 ارب 60 کروڑ ڈالر کا نقصان، اب کتنے اثاثے باقی رہ گئے؟

کیس کی تفتیش کے دوران یہ بات بھی سامنے آئی کہ نوجوان لڑکی کو کچھ عرصہ ملزمان نے خود زیادتی کا نشانہ بنایا جس کے بعد اسے گاہکوں کے پاس جسم فروشی کیلئے بھی بھیجا جانے لگا۔ جب بھی اسے کسی گاہک کے پاس بھیجا جاتا اس سے پہلے فلیٹ میں موجود ملزمہ جنسی کھلونوں کے ساتھ اس کے ساتھ زیادتی کرکے اسے گاہک کیلئے تیار کرتی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں