شکیل آفریدی کی جان کو خطرہ، پشاور سے اڈیالہ جیل منتقل

پشاور: ڈاکٹر شکیل آفریدی کو سیکیورٹی خدشات کے باعث پشاور سے پنجاب کی اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا۔

اسامہ بن لادن کے خلاف امریکی فوجی آپریشن سے شہرت پانے والے مجرم شکیل آفریدی کو جان کے خطرات کے باعث کے پی کے کی پشاور جیل سے پنجاب کی اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا۔

خیبر پختون خوا حکومت کے مطالبے پر یہ منتقلی انتہائی سخت سیکیورٹی میں آج سہ پہر ہوئی اور اڈیالہ جیل کے باہر اور اندر سیکیورٹی ہائی الرٹ رہی۔ قبل ازیں کے پی کے حکومت نے متعدد بار وفاق سے درخواست کی تھی کہ کے پی کے کی جیل میں شکیل آفریدی کی جان کو خطرہ لاحق ہے اور جیل پر حملے کے خدشات ہیں اس لیے آفریدی کو کہیں اور منتقل کیا جائے۔
خیال رہے کہ شکیل آفریدی کو اسامہ بن لادن کی ہلاکت کے بعد حراست میں لیا گیا تھا۔ شکیل آفریدی پر الزام ہے کہ اس نے امریکن سی آئی اے کی ایما پر اسامہ بن لادن کا بلڈ سیمپل حاصل کرنے کی کوشش کی تھی بعدازاں ثابت ہوا کہ وہ پہلے بھی امریکن سی آئی اے کے لیے کام کرتا رہا ہے۔

ضرور پڑھیں   موجودہ حکومت میں مہنگائی 2008 اور 2013 سے کم ہے، اسد عمر

جرم ثابت ہونے پر خیبر ایجنسی کی پولیٹکل ایجنسی نے 33 برس قید کی سزا سنائی تھی جس کے بعد سے وہ کے پی کے کی جیل میں بند تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں