سپریم کورٹ کا فیصلہ انصاف کے تقاضوں کے منافی ہے، ترجمان مسلم لیگ (ن)

اسلام آباد: ترجمان پاکستان مسلم لیگ (ن) نے سپریم کورٹ کے حالیہ فیصلے کو انصاف کے بنیادی تقاضوں کے منافی قرار دیا ہے۔

مسلم لیگ (ن) کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ 1973کے آئین کی خالق پارلیمنٹ کے بنائے ہوئے قانون کو ختم کر دیا گیا، اس فیصلے کی جمہوری تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی، عدالتی فیصلے سے ایوب خان اور پرویز مشرف کا آمرانہ اور جمہوریت کش کالا قانون بحال ہو گیا ہے۔ ایک سیاسی جماعت سے اس کا سربراہ چننے کا جمہوری حق چھین لیا گیا، ماضی میں بھی ایسے متنازع فیصلوں سے سیاسی جماعتوں سے ان کی قیادت چھیننے کی کوشش کی جاتی رہی ہے۔ جو کبھی کامیاب نہیں ہوئی۔

ترجمان مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھا کہ نواز شریف کسی فرد کا نہیں بلکہ ایک نظریے، فلسفے اور تحریک کا نام ہے، وہ کروڑوں عوام کی جمہوری امنگوں کے حقیقی ترجمان بن چکے ہیں۔ ان کی قیادت کسی عہدے یا منصب کی محتاج نہیں، پاکستان مسلم لیگ (ن) نواز شریف کی رہبری اور قیادت میں آئین، قانون اور جمہور کی حکمرانی کی جدوجہد جاری رکھے گی۔ نواز شریف کی قیادت میں آئین اور قانون کی حکمرانی کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں