ذوالفقار کھوسہ پی ٹی آئی میں شامل، دوست محمد کھوسہ کو پارٹی میں لینے سے انکار

لاہور: مسلم لیگ (ن) کے ناراض رہنما سردار ذوالفقار کھوسہ نے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرلی تاہم پی ٹی آئی نے دوست محمد کھوسہ کو پارٹی میں شامل کرنے سے انکار کردیا۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کئی روز سے سردار ذوالفقار کھوسہ کو پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کے لیے قائل کررہے تھے۔ ان کی کامیابی کے بعد عمران خان دیگر پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ لاہور میں ذوالفقار کھوسہ کی رہائش گاہ پہنچے۔ عمران خان سے ملاقات کے دوران سردار ذولفقار کھوسہ نے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کردیا۔

اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ذوالفقار کھوسہ کا مسلم لیگ (ن) میں ایک مقام تھا، ہم ذوالفقار کھوسہ کو پارٹی میں خوش آمدید کہتے ہیں۔

اس موقع پر ذوالفقار کھوسہ کے بیٹے اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب دوست محمد کھوسہ نے بھی تحریک انصاف میں شمولیت کی خواہش ظاہر کی تاہم تحریک انصاف نے انہیں پارٹی میں شامل کرنے سے انکار کردیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دوست محمد کھوسہ پر سپنا کیس کے حوالے سے مختلف الزامات تھے جس کے باعث انہیں تحریک انصاف میں شامل نہیں کیا گیا۔

واضح رہے کہ ذوالفقار کھوسہ کا شمار مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماؤں میں ہوتا تھا، وہ پنجاب کے گورنر کی حیثیت سے بھی ذمہ داریاں سر انجام دے چکے ہیں تاہم اپنے آبائی علاقے میں روایتی انتخابی حریف فاروق لغاری مرحوم کے بیٹے اویس لغاری کی مسلم لیگ (ن) میں شمولیت کے بعد پارٹی قیادت سے ان کے شدید اختلافات ہوگئے تھے۔

یاد رہے کہ ایک روز قبل ہی تحریک انصاف نے اداکارہ شبنم سے 1979ء میں زیادتی کے مرتکب سیاسی رہنما فاروق بندیال کو تحریک انصاف سے نکال دیا ہے وہ دو روز قبل ہی تحریک انصاف میں شامل ہوئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں